انقلابی کیمونسٹ انٹرنیشنل ٹینڈیسی کیا چاہتی ہے؟

Download
RCIT - WWS_Urdu.gif
Graphic Interchange format 66.2 KB

 

انقلابی کمیونسٹ انٹرنیشنل رجحان محنت کش طبقے اور تمام مظلوم کی آزادی کے لئےجدوجہد کی حامل ایکنقلابی تنظیم ہے. اس کے مختلف ممالک میں قومی سیکشن ہیں۔محنت کش طبقہ سرمایہ دار کو اجرت کمانے کے لیے اپنی قوت محنت فروخت کرنے پرمجبو ہے . RCIT مارکس، اینگلز، لینن اور ٹراٹسکی کے انقلابی نظریات اور عمل کی بنیاد پر مزدور تحریک میں جدوجہد کررہی ہے۔
سرمایہ داری نے ہماری زندگی اور انسانیت کے مستقبل کو خطرے میں ڈال دیا ہے. ے روزگاری، جنگ، ماحولیاتی آفات، بھوک، اور استحصال سرمایہ داری کے تحت روز مرہ زندگی کا حصہ ہیں،جس طرح اس میںقوموں پر سامراجی جبر، مہاجرین پر قومی جبر، عورتوں، نوجوان لوگوں، اور ہم جنس پرست پر جبر ہے اس لیے ہم نے سرمایہ دارانہ نظام کاخاتمہ چاہتے ہیں۔
محنت کش طبقے ور تمام مظلوموںکی آزادی استحصال اور جبر سے پاک ایک غیر طبقاتی معاشرے میں ممکن ہے. ایسا معاشرہ صرف بین الاقوامی سطح پرہی قائم کیا جا سکتا ہے۔.لہذا RCIT دنیا بھر میں ایک سوشلسٹ انقلاب کے لئے جدوجہد کررہاہے.
یہ انقلاب محنت کش طبقہ کی قیاد ت میں ہی ممکن ہے محنت کش طبقہ میں ہی یہ صلاحیت ہے کہ وہ سرمایہ داری نظام کا خاتمہ کرسکے اور جو سوشلسٹ سماج کی تعمیرکر سکے۔انقلاب پر امن طریقے سے ممکن نہیں کیونکہ حکمران طبقہ کبھی رضاکارنہ طورپر طاقت .چھوڑنے کے لیے تیار نہیںہوگا لہذا سرمایہ داری نظام کے خاتمے کے لیے جدوجہد میں مسلح جدوجہد اور خانہ جنگی اس کا حصہ ہوسکتی ہے۔
RCITمحنت کشوں اور کسانوں کی ریاست قائم کرنا چاہتی ہے جس میں استحصال اور جبر کے شکا رخود کو جمہوری کونسلز کے میں منظم اور اپنے نمائندے منتخب کریں گئیں۔یہ کونسلز ہی حکومت کو منتخب اور اسے کنٹرول کرے گی اور اس کو جب چاہے واپس بلاسکے گی اور تمام ریاستی ادارے اس کے تابع ہوں گے۔
حقیقی سوشلزم اور کمیونزم کاسوویت یونین، مشرقی یورپ، چین اور کیوبا میں قائم نام نہاد "سوشلزم" کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے. ان ممالک میںمراعات یافتہ پارٹی بیوروکریسی پرولتاریہ پرمسلط اور ان پرجبرکرتی تھی۔.
سرمایہ دارانہ نظام کے تحت RCIT محنت کشوں اور مظلوموںکے حالات زندگی بہتر بنانے کے لئے تمام کوششوں کی حمایت کرتی ہے اس کے ساتھ ہی محنت کش طبقہ کے معاشی استحصال پر مبنی اس نظام کی بھی خاتمہ کی جدوجہد کررہی ہے۔ان مقاصد کی طرف ہم ٹریڈ یونینوں میں کام کرتے ہیںجہاں طبقاتی جدوجہد، اور مزدور جمہوریت کے لیے جدوجہد کرتے ہیں ۔لیکن ٹریڈیونیز اور سوشل ڈیموکریسی بیوکریٹک قیادت کے کنٹرول میں ہے جوبڑی تنخواہوں اور دیگر مراعات کے ذریعے ریاست اور سرمایہ سے منسلک ہے۔ٹریڈیونین کی بیورکریسی کے مفادات ان کی ممبر شپ سے مختلف ہوتے ہیں،جنہیں حکمران طبقہ مراعات فراہم کرتا ہے اور یوں ان کا سرمایہ داری نظام کے خاتمہ میں کوئی حقیقی مفاد نہیںہوتا،اس لیے محنت کش طبقہ کے انقلاب کی جدوجہد محنت کش طبقہ کی اکثریت کی شمولیت کے بغیر ممکن نہیں۔
.ہم بڑی زمینداری کے خلاف جدوجہد اور ان کی زمین کو قومی ملکیت میں لیے جانے اور غریب اور بے زمین کسانوں میں تقسیم کے حق میں ہیں. اس مقصد کی طرف ہم دیہیمحنت کشوں کی آزاد نہ تنظیم سازی کے حق میں ہیں۔ہم قومی جبر کے خلاف تحریکوں کی حمایت کرتے ہیں۔ بڑی طاقتوں کے خلاف مظلوم عوام کی سامراج مخالف جدوجہد کی حمایت کرتے ہیں ان تحریکوں میں ہم قوم پرست یا اصلاحپسندقیادت کے متبادل پر ایک انقلابی قیادت کی وکالت کرتے ہیں.
RCIT دیگر تنظیموں کے ساتھعمل میں اتحاد کی حامی ہے لیکن ہم جانتے ہیں کہ سوشل ڈیموکریٹس اور نام نہاد انقلابی گروپوں کی پالیسیاںحقیت میں خطرناک ہیں اور محنت کش طبقے، کسانوں، اور دوسری صورت میں مظلوم کی آزادی کی راہ میں رکاوٹ ہیں.
ہم سامراجی ریاستوں کے درمیان جنگ میں کسی کا ساتھ نہیں دیتے بلکہ ان کی انقلابی شکست پوزیشن لیتے ہیں اور اس جنگ کو حکمران طبقہ کے خلاف جنگ میں بدلنے کی حمایت کرتے ہیں۔
. سامراجی طاقتوں (یا ان کے کٹھ پتلی) اور ایک نیم نوآبادیاتی ممالک کے درمیان جنگوں میں ہم نے سابق کی شکست اور مظلوم ممالک کی فتح کی حمایت کرتے ہیں۔
کمیونسٹوں کے طور پر، ہم سمجھتے ہیں کہ قومی جبر اور سماجی جبر (خواتین، نوجوانوں، جنسی اقلیتوں وغیرہ) کی تمام اقسام کے خلاف جدوجہدمو،خر الذکر معاشرے میں انقلابی تبدیلی محنت کش طبقے کی قیادت میں ہی ممکن ہے.
 لہذہم سماجی طور پر مظلوموں کی تحریکوں کی مستقل مزاجی سے حمایت کرتے ہیںلیکن پیٹی بورڑوا فورسز (تحریک نسواں، قوم پرستی، اسلام پسند، وغیرہ)، کی قیادت کی مخالفت کرتے ہوئے ہیں جوبالآخر سرمایہ کی دھن پر رقص کرتے ہیں، اوران کی جگہتحریک کو کیمونسٹ قیادت میں لانے کی جدوجہد کرتے ہیں۔
انقلابی پارٹی کی قیادت میں ہی محنت کش طبقہ کا انقلاب ممکن ہے انقلابی پارٹی کی تعمیر سے ہی انقلاب ممکن ہے جس طرح کہ روس میں لینن اور ٹراٹسکی کے تحت بالشویکوں نے انقلاب برپا کیا تھا۔یہ پارٹی اکیسویں صدی میںانقلاب کے لیے ماڈل ہے۔
تمام ممالک میں نئی انقلابی مزدورں کی پارٹیوں اور ایک نئی پانچوں انٹرنیشنل کے قیام کے لیے جو انقلابی پروگرام رکھتی ہوکے لیے RCIT شمولیت اختیار کریں۔
سوشلزم کے بغیر کوئی مستقبل نہیں! انقلاب کے بغیر کوئی سوشلزم نہیں! ایک انقلابی پارٹی کے بغیر کوئی انقلاب ممکن نہیں۔